NowNews.pk | 24/7 News Network

ایڈمرل امجد خان نیازی نے پاک بحریہ کی کمان سنبھال لی

ایڈمرل محمد امجد خان نیازی ہلالِ امتیاز (ملٹری)، ستارۂ بسالت نے 22 ویں چیف آف دی نیول اسٹاف کے طور پر پاک بحریہ کی کمان سنبھال لی۔

تبدیلیٔ کمانڈ کی پروقار تقریب پی این ایس ظفر اسلام آباد میں منعقد ہوئی جہاں ایڈمرل ظفر محمود عباسی نشانِ امتیاز (ملٹری) نے اپنی مدتِ ملازمت کے اختتام پر پاک بحریہ کی کمانڈ ایڈمرل محمد امجد خان نیازی کے سپرد کی۔

پاک بحریہ کے افسران اور جوانوں سے اپنے الوداعی خطاب میں سبکدوش ہونے والے نیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے اللہ تعالیٰ کی بیش بہا عنایتوں کا شکر ادا کیا جن کی بدولت انہوں نے پاک بحریہ کی کمانڈ بہترین انداز میں انصاف، ایمانداری اور وقار کے ساتھ مکمل کی۔

انہوں نے کہا کہ ان کا بنیادی مقصد پاک بحریہ کو ہمہ وقت تیار فوج بنانا تھا جس کا دارو مدار بہترین جنگی تیاری اور پیشہ وارانہ مہارت پر ہو۔

ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے اپنے وژن کی مختلف جہتوں کی تکمیل کے لیے پاک بحریہ کے افسران اور جوانوں کی جانب سے کی جانے والی انتھک محنت کو سراہا۔

انہوں نے گزشتہ برسوں میں غیر مستحکم جغرافیائی و سیاسی صورتحال اور بڑھتی ہوئی کشیدگی کے بارے میں بات کرتے ہوئے پلوامہ واقعے کے بعد کی صورتحال کا خصوصاً ذکر کیا۔

ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے کہا کہ پاکستانی عوام اور فوج کے مشترکہ مؤقف اور اسے سفارتی و ملٹری سطح پر اُجاگر کرنے سے بھارت کے ارادے خاک میں ملا دیے گئے، پاکستان کی مسلح افواج نے بھارتی عزائم کا منہ توڑ جواب دیا اور دل و دماغ کی جنگ میں فتح حاصل کر تے ہوئے بھارتی جھوٹے دعوؤں کو نیست و نابود کیا۔

انہوں نے پاکستان کے سمندر میں دراندازی کی کوشش کرنے والی بھارتی آبدوز کو پکڑنے پر پاک بحریہ کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کی تعریف کی۔

ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے اپنے دور میں بحری آگہی اور بلو اکانومی کے فروغ کے لیے کیے جانے والے اقدامات خصوصاً سمندر میں موجود ہائیڈرو کاربن کے ذخائر کی تلاش پر روشنی ڈالی جس کی بدولت پاکستان کے غیر دریافت شدہ ذخائر سے پاکستان کو بیش بہا فائدہ حاصل ہو سکتا ہے۔

اپنے خطاب کے اختتام پر ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے پاک بحریہ کی کمانڈ سنبھالنے پر ایڈمرل محمد امجد خان نیازی کو مبارک باد دی۔

انہوں نے نئے نیول چیف کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا کہ ان کی سربراہی میں پاک بحریہ بلندی کے نئے مراحل طے کرے گی۔

ایڈمرل عباسی نے کمانڈ کی سپردگی کے موقع پر اپنے فرائض کی ادائیگی میں مکمل معاونت پر حکومتِ پاکستان، وزارتِ دفاع، جوائنٹ سروسز ہیڈکوارٹرز اور دیگر مسلح افواج کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا۔

قبل ازیں، سبکدوش ہونے والے نیول چیف کو گارڈ آف آنر دیا گیا۔

ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے روایتی اسکرول پیش کر تے ہوئے پاک بحریہ کی کمانڈ ایڈمرل محمد امجد خان نیازی کے سپرد کی۔

تبدیلیٔ کمانڈ کی تقریب میں پاک بحریہ کے سابق سربراہان، حاضر و ریٹارڈ افسران، سی پی اوز/سیلرز اور نیوی سویلینز نے شرکت کی۔

بعد ازاں امیر البحر محمد امجد خان نیازی نے نیول ہیڈ کوارٹرز میں یادگارِ شہداء پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور فاتحہ خوانی کی۔

نیول ہیڈکوارٹر آمد پر چاوق و چوبند دستے نے نئے امیر البحر کو سلامی پیش کی۔

چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل محمد امجد خان نیازی نے پاک بحریہ کی آپریشنز برانچ میں 1985ء میں کمیشن حاصل کیا۔

اعلیٰ صلاحتیوں کے پیشِ نظر اعزازی شمشیر حاصل کرنے والے ایڈمرل محمد امجد خان نیازی کو کمانڈ اور اسٹاف عہدوں کا وسیع تجربہ ہے۔

ان کی کمانڈ تقرریوں میں دو Type-21 جہاز پی این ایس بدر اور پی این ایس طارق کی کمانڈ، اٹھارہویں ڈسٹرایئر اسکواڈرن کی کمانڈ، کمانڈینٹ پی این ایس بہادر، کمانڈینٹ پاکستان نیوی وار کالج/کمانڈر سینٹرل پنجاب، کمانڈر پاکستان فلیٹ اور کمانڈر کراچی شامل ہیں۔

ان کی اہم اسٹاف تقرریوں میں چیف آف دی نیول اسٹاف کے پرنسپل سیکریٹری، ہیڈ آف F-22P مشن چائنہ، ڈپٹی چیف آف نیول اسٹاف (ٹریننگ اینڈ ایوالیوایشن)، ڈائریکٹر جنرل نیول انٹیلی جنس اور چیف آف اسٹاف (آپریشنز) شامل ہیں۔

ایڈمرل محمد امجد خان نیازی آرمی کمانڈ اینڈ اسٹاف کالج کوئٹہ اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی اسلام آباد کے گریجویٹ ہیں۔

انہو نے چین کی بیجنگ یونیورسٹی آف ایروناٹکس اینڈ ایسٹروناٹکس سے Acoustics Underwater میں ماسٹرز کی ڈگری بھی حاصل کی ہے۔

ایڈمرل محمد امجد خان نیازی کی اعلیٰ خدمات کے اعتراف میں انہیں ہلالِ امتیاز (ملٹری) اور ستارۂ بسالت کے اعزاز سے نوازا گیا ہے۔

ان کو حکومتِ فرانس کی جانب سے فرانسیسی میڈل (Knight) Chevalier سے بھی نوازا گیا ہے۔

دیگر خبریں

لوڈنگ ۔۔۔