کورونا سے صحتیاب بچوں میں نئی بیماری پھیلنے لگی

کورونا کے بعد بچوں میں نئی بیماری کی تشخیص نے ڈاکٹروں کو پریشان کردیا۔ کوروناوائرس کے بعد پاکستان میں ایک اور بیماری نے اپنی جڑیں پھیلانا شروع کردیں۔

کاواساکی طرز کی بیماری کو ملٹی سسٹم انفلیمٹری سینڈروم ان چلڈرن کا نام دیا گیا ہے۔

لاہور چلڈرن اسپتال کے ڈین پروفیسر مسعود صادق کے مطابق کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والے متعدد بچوں میں یہ بیماری پائی جارہی ہے، دو سے پانچ ہفتوں کے دوران صحت یاب متعدد بچے اس بیماری کا شکار ہورہے ہیں۔

پروفیسر مسعود صادق کے مطابق اس بیماری میں بچوں کی آنکھیں سرخ، ہونٹ اور منہ کا اندر والا حصہ لال ہوجاتا ہے، جسم پر ریشز اور دل بھی متاثر ہوتا ہے،جس سے بچوں کی زندگی کو خطرہ ہوسکتا ہے۔

اس بیماری کے شکار ہونے والے بچوں سے یہ دوسروں میں منتقل نہیں ہوگی۔

پرفیسر مسعود صادق کے مطابق اس کا علاج بھی کاواساکی بیماری کی طرح کررہے ہیں، اس وقت کراچی اور اسلام آباد میں اٹھارہ اور چلڈرن اسپتال میں پانچ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ یہ نئی بیماری ہے اور اس کے علاج کے لیے ڈاکٹرز کی رہنمائی بھی ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر بروقت اس کو کنٹرول نہ کیا گیا تو دو سے تین ہفتوں تک اس کی تعداد بڑھ جائے گی۔

دیگر خبریں

لوڈنگ ۔۔۔