NowNews.pk | 24/7 News Network

اعتراضات کی بجائے مل کر عالمی چیلنج سے نمٹا جائے

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کہتے ہیں وزیراعظم کی ہدایت پر سپیکر نے پارلیمانی راہنماؤں کا اجلاس بلایا، مقصد کورونا کے خلاف مشاورت تھا، یہ وقت اعتراضات کی بجائے مل کر عالمی چیلنج سے نمٹنے کا ہے، آج نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی میں وزیراعظم لائحہ عمل کے حوالے سے صوبوں سے مشاورت کریں گے۔

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ کل منعقد ہونے والے پارلیمانی اجلاس کو وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر اسپیکر نے بلای، وزیر اعظم یہ چاہتے تھے کہ کہ کرونا کے خلاف مشترکہ لائحہ عمل کیلئے تمام پارلیمانی رہنماؤں سے مشاورت کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے اپنی مصروفیات موقوف کر کے ویڈیو لنک کے ذریعے پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس میں شرکت کی، پارلیمانی رہنماؤں کا یہ اجلاس پونے چار گھنٹے جاری رہا ہم. نے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا اور چیرمین این ڈی ایم اے سے تفصیلی بریفنگ دلوائی ہم نے سب رہنماؤں کی آراء کو سنا اور میں نے خود ان کی طرف سے اٹھائے گئے اعتراضات کو نوٹ کیا اور اجلاس کے اختتام پر ان کا جواب بھی دیا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ یہ ایک دوسرے پر نکتہ چینی کا وقت نہیں ہے یہ وفاق اور صوبوں کے وسائل اور کاوشوں کو یکجا کر کے پوری قوت کے ساتھ اس عالمی چیلنج سے نمٹنے کا وقت ہے۔ ہمیں صوبوں کے ساتھ مشاورت سے مشترکہ حکمت عملی اپنانا ہو گی، ہمیں سپلائی چین کو معطل ہونے سے بچانا ہے تا کہ اشیاء ضروریہ کی قلت نہ ہو۔

دیگر خبریں

لوڈنگ ۔۔۔