NowNews.pk | 24/7 News Network

چینی بحران سے جہانگیر ترین کو 56 کروڑ کا فائدہ

ملک میں حالیہ چینی بحران پر سب سے زیادہ فائدہ حکمراں جماعت کے رہنما نے اٹھایا۔ جہانگیر ترین نے چھپن کروڑ روپے کمائے۔ وزیراعظم کے حکم پر جاری رپورٹ میں چوہدری مونس الہیٰ اور دیگر لوگوں کے نام بھی سامنے آئے ہیں۔ مشیر احتساب شہزاد اکبر کہتے ہیں رپورٹ کی سفارشات پر وزیراعظم عمل کریں گے۔

آٹا چینی بحران کی تحقیقاتی رپورٹ جاری۔ وزیر اعظم کے حکم پر جاری کی گئی رپورٹ میں بڑے نام منظر عام پر آگئے۔ جہانگیر ترین نے سبسڈی کی مد میں چھپن کروڑ روپے کمائے۔ چوہدری مونس الٰہی اور چوہدری منیر نے بھی خوب مال بنایا۔

وفاقی وزیر خسرو بختیار کے رشتہ دار نے 45 کروڑ روپے بنائے۔ گندم بحران پر تحقیقاتی رپورٹ میں کسی کو ذمہ دار نہیں ٹھہرایا گیا لیکن اس کی وجہ یہ بتائی گئی کہ وفاقی اور صوبائی حکومت نے کوئی منصوبہ بندی نہیں کی۔

وزیر خوراک پنجاب سمیع اللہ چوہدری پر صورتحال کے پیش نظر فوڈ ڈیپارٹمنٹ میں اقدامات نہ کرنے کی ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔

معاون خصوصی احتساب شہزاد اکبر نے واضح کیا کہ رپورٹ میں دی گئی سفارشات پر وزیراعظم عمل کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ 25 ارب روپے سبسڈی کے باوجود چینی کی قیمتیں بڑھیں۔ سبسڈی لینے والوں میں ترین اور شریف گروپ بھی شامل ہیں۔

دیگر خبریں

لوڈنگ ۔۔۔