NowNews.pk | 24/7 News Network

ابھی نندن کی رہائی کو کسی چیز سے جوڑنا غلط ہے

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے کہا ہے کہ کل ایک ایسا بیان دیا گیا جس میں تاریخ کو مسخ کرنے کی کوشش کی گئی، یہی بیانیہ ہندوستان کی شکست اور ہزیمت کو کم کرنے کیلئے استعمال کیا جارہا ہے، ایسے منفی بیانیے کے قومی سلامتی پر براہ راست اثرات ہوتے ہیں۔

میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ پلوامہ واقعے کے بعد 26فروری کو بھارت نے پاکستان کے خلاف جارحیت کی، اور پھر پاکستان نے اعلانیہ بھارت کو دن کی روشنی میں جواب دیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) میجر جنرل بابر افتخار نے پریس بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ بھارت کو اس روز نہ صرف منہ کی کھانی پڑی، بلکہ پوری دنیا میں اسے حزیمت ہوئی۔

میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ دشمن کے جہاز ہمارے شاہینوں کو دیکھتے ہی بارود خالی پہاڑ پر پھینک کر چلے گئے۔

انہوں نے کہا کہ پاک فوج نے نہ صرف جواب دیا بلکہ دشمن کے دو جنگی جہاز بھی مار گرائے، جبکہ دشمن نے بدحواسی میں اپنا ہی ہیلی کاپٹر مار گرایا اور پاکستان کو فتح نصیب ہوئی۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ پاکستان کی فتح کو نہ صرف دنیا میں تسلیم کیا گیا، بلکہ بھارتی قیادت نے اپنی شکست کا جواز رافیل کی عدم دستیابی پر ڈال دیا۔

انہوں نے کہا کہ ابھی نندن کی جنیوا کنونشن کے تحت رہائی کو پوری دنیا نے سراہا، پاکستان نے پہلے اپنی صلاحیت اور عزم کا مظاہرہ کیا۔

دیگر خبریں

لوڈنگ ۔۔۔