NowNews.pk | 24/7 News Network

ملک بھر میں شادی ہالز کی رونقیں بھی بحال

صوبائی حکومتوں نے کورونا پابندیوں میں مزید نرمی کرتے ہوئے شادی بیاہ کی تقاریب اور شادی ہالز پر عائد پابندی اٹھالی۔

واضح رہے کہ کورونا وائرس کے باعث لگائے گئے لاک ڈاؤن کے دوران گزشتہ 6 ماہ سے شادی بیاہ کی تقاریب پر پابندی تھی۔

تاہم اب نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) کے فیصلوں کے تحت پابندی اٹھانے سے متعلق محکمہ داخلہ سندھ نے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔

محکمہ داخلہ سندھ کا کہنا ہے کہ 15ستمبر کے بعد سے شادی ہالز میں تقاریب کا انعقاد ہوسکے گا۔نوٹیفکیشن کے مطابق سماجی فاصلوں اور ماسک کے ساتھ شادی ہالز میں تقاریب کا انعقاد ہوسکے گا۔محکمہ داخلہ سندھ کا کہنا ہے کہ تجارتی اور کاروباری سرگرمیوں کے لیے اوقات کار جاری کردیے گئے ہیں۔

سندھ بھر میں تجارتی کاروباری سرگرمیاں صبح 6 سے رات 8 بجے تک ہوں گی جبکہ ہفتے کے روز رات 9 بجے تک دکانیں کھلی رکھی جاسکیں گی۔

محکمہ داخلہ سندھ کا کہنا ہے کہ میڈیکل اسٹورز، اشیائے ضروریہ کی دکانیں اوقات کار کی پابندیوں سے مستثنیٰ ہوں گے۔ محکمہ داخلہ سندھ کے مطابق لاک ڈاون پابندیوں میں نرمی کا حکمنامہ 15 اکتوبر تک موثر ہوگا۔

دوسری جانب خیبر پختونخوا حکومت نے بھی شادی ہالز 15 ستمبر سے کھولنے کا اعلامیہ جاری کر دیا ہے۔

پشاور سے جاری اعلامیہ کے مطابق شادی ہالز میں اسٹاف 50 فیصد کم افراد پر مشتمل ہوگا۔ شادی ہالز میں سماجی دوری پر مبنی اقدامات کے تحت لوگوں کو بٹھایا جائے گا۔ شادی ہالز کھولنے سے قبل تمام عملے کے کورونا ٹیسٹ کرائے جائیں۔

اعلامیہ میں مزید کہا گیا ہے کہ شادی ہالز کے داخلی اور خارجی راستوں پر رش سے گریز کیا جائے۔ شادی ہالز انتظامیہ بخار چیک کرنے کیلیے تھرمل گن کا انتظام کرے گی اور تقریب سے قبل شادی ہالز کو سینی ٹائز کیا جائے۔

اعلامیہ کے مطابق 2 گھنٹے سے زیادہ شادی ہالز میں کوئی بھی پروگرام نہیں ہو گا۔ شادی ہال میں 2 گھنٹے وقفے کے بعد دوسرے پروگرام کی اجازت ہو گی۔

اعلامیہ کے مطابق رات 10 بجے کے بعد کسی بھی شادی ہال میں پروگرام کی اجازت نہیں ہو گی۔ اعلامیہ میں ہدایت کی گئی ہے کہ شادی ہالز کے داخلی دروازوں پر سینیٹائزرز کی دستیابی یقینی بنائی جائے۔

دیگر خبریں

لوڈنگ ۔۔۔