NowNews.pk | 24/7 News Network

کورونا وائرس مذاق نہیں، خدارا سنجیدہ ہوجائیں

از صدف ہلال
از صدف ہلال

کورونا وائرس نے دنیا بھر میں قیامت ڈھا رکھی ہے۔ ہزاروں لوگ موت کے منہ میں جاچکے ہیں، لاکھوں لوگ متاثر ہیں جو زندگی اور موت کی جنگ لڑرہے ہیں۔ کئی ممالک میں کرفیو اور لاک ڈاؤن ہے۔

اس تمام تر صورتحال کے باجود پاکستان کے کئی شہری کورونا وائرس کو سنجیدہ نہیں لے رہے جبکہ ملک میں سینکڑوں افراد اس وائرس سے متاثر ہوچکے ہیں۔ ہر سطح پر حکومت و انتظامیہ کی جانب سے اقدامات کئے جارہے ہیں۔

ہمیں اس حقیقت کو اچھی طرح جان لینا چاہئیے کہ ترقی یافتہ ممالک اس وائرس سے شدید متاثر ہوئے ہیں تو پاکستان کیسے ناکافی وسائل سے اس وبا پر قابو پاسکے گا۔

یہاں شہریوں کو خود اپنی حفاظت کرنی ہوگی، ہر فرد اپنے آپ کو اور اپنے گھر والوں کو محفوظ رکھنے کی کوشش کرے۔ اسکولوں دفاتر کی چھٹیوں کا مقصد یہ نہیں کہ وقت سیر و تفریح میں گذارا جائے جس سے نہ صرف خود کو خطرہ ہے بلکہ آپ کی وجہ سے دوسرے بھی متاثر ہوسکتے ہیں۔

سوشل میڈیا پر کورونا وائرس سے متعلق مختلف طنز و مزاح کی باتیں کی جارہی ہیں۔ بہت سے کہنے والے یہ بھی کہتے نظر آرہے ہیں کہ ’’بھائی کچھ نہیں ہوتا جب موت آنا ہوگی آجائے گی‘‘۔ اگر ایسی ہی بات ہوتی تو قدرت انسان کو احتیاط کی ہدایت نہ کرتی۔

بار بار اعلی حکام کی جانب سے اپیل کی جارہی ہے کہ احتیاط کریں اور گھروں میں رہیں، عالم دین بھی اسی بات کی تلقین کررہے ہیں۔ پوری دنیا میں عبادات کا سلسلہ شدید متاثر ہوا ہے۔ جب اتنا سب کچھ ہوچکا ہے تو پھر کس بات کا انتظار ہے۔ اپنی، اپنے گھر والوں کی اور دوسروں کی زندگی خطرے میں نہ ڈالیں۔ جو احتیاطی تدابیر بتائی گئی ہیں اس پر عمل کریں۔

جان ہے تو جہان ہے، کورونا وائرس کو مذاق نہ سمجھیں، خدارا سنجیدگی سے احتیاطی تدابیر پر عمل کریں۔

دیگر خبریں

لوڈنگ ۔۔۔